ان کو روزانہ ایک لاکھ جرمانہ کریں اور پھر ایک ہفتے بعد۔۔!!! چیف جسٹس کے حکم سے سیاستدانوں کی چیخیں نکل گئیں

کوئٹہ(این این آئی)محکمہ نظم و نسق بلوچستان نے سرکاری گاڑیاں واپس نہ کرنے والے سابق صوبائی وزرا، مشیروں اور معاونین پر ایک لاکھ روپے یومیہ جرمانے کا فیصلہ کیا ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ روز سپریم کورٹ میں لگژری گاڑیوں کے استعمال سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس ثاقب نثار نے رات تک بلوچستان کے 7 سابق وزراء کو اپنی گاڑیاں جمع کرانے کی ہدایت کی تھی۔چیف جسٹس نے کہا کہ گاڑیاں جمع نہ کرانے پرایک لاکھ روپے یومیہ جرمانہ ہوگا اور ایک ہفتے کے بعد جرمانہ 2 لاکھ روپے روزانہ ہوجائے گا۔سرکاری ذرائع کے مطابق صوبے میں حکومت کی تحلیل کے بعد سابق وزراء ، مشیروں اور معاونین سے سرکاری گاڑیوں کی واپسی کا عمل جاری ہے اور اب تک محکمہ نظم ونسق کو 50 گاڑیاں وصول ہو چکی ہیں جبکہ 20 سے زائد گاڑیاں تاحال محکمے کو موصول نہیں ہوئی ہیں۔سرکاری گاڑیوں کی واپسی کیلئے دو روز قبل کی ڈیڈلائن مقرر کی گئی تھی،

Share

اپنا تبصرہ بھیجیں