ایم کیو ایم تحریک انصاف کے ساتھ ہے یا خلاف ؟بلاآخر سب سے بڑا فیصلہ کرلیا

کراچی (ڈیلی سماج آن لائن)ایم کیو ایم پاکستان نے مرکز میں تحریک انصاف کا ساتھ دینے کا فیصلہ کرلیا ہے اور کہا ہے کہ ایم کیو ایم حکومت ساز ی کے عمل میں بھی شریک ہوگی اور وفاق میں تحریک انصاف کے ساتھ حکومتی بنچوں پر بیٹھے گی ، اپوزیشن کی اے پی سی میں ایم کیو ایم پاکستان کا کوئی نمائندہ شرکت نہیں کرے گا ،الیکشن میں ہونے والی دھاندلی پر احتجاج ہمارا حق ہے ،الیکشن کمیشن اور عدالت کے ذریعے ہم احتجاج کرتے رہیں گے ۔
تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل ’’جیونیوز‘‘ کے پروگرام ”آج شاہ زیب خانزادہ کے ساتھ“ میں گفتگو کرتے ہوئے ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ سندھ میں پیپلز پارٹی کو کسی کی ضرورت نہیں ہے ، ایم کیو ایم پاکستان تحریک انصاف کے ساتھ حکومتی بینچوں پر بیٹھے گی۔انہوں نے کہا کہ ہم سب کے مینڈیٹ کا احترام کرتے ہیں لہٰذا ہمارے مینڈیٹ کا بھی احترام کیا جائے، میرا نہیں خیال کہ اتنے تجربات کے بعد ایم کیو ایم سندھ حکومت میں شامل ہوگی۔خالد مقبول صدیقی کا کہنا تھا کہ پچھلی مرتبہ اپوزیشن میں بیٹھے تھے لیکن حکومت سازی میں مدد کی تھی،اب ہم نے وفاق میں تحریک انصاف کے ساتھ حکومتی بنچوں پر بیٹھنے کا اصولی فیصلہ کر لیا ہے جبکہ ایم کیو ایم پاکستان نے واضح اعلان کر دیا ہے کہ اپوزیشن کی کل جماعتی کانفرنس میں شرکت نہیں کریں گے لیکن انتخابات میں دھاندلی کا احتجاج عدالتوں اور الیکشن کمیشن کے ذریعے کریں گے جو ہمارا آئینی اور قانونی حق ہے۔ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی کا جہانگیر خان ترین کے ساتھ ہونے والی ملاقات کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں کہنا تھا کہ ملاقات کے دوران واضح طور پر کہا گیا تھا کہ ایم کیو ایم کو کچھ نہیں چاہیے، صرف شہر کے مسائل حل کرنا چاہتے ہیں،کراچی شہر میں دیرینہ پانی کا مسئلہ ہے اور اس سلسلے میں کے فور منصوبے کی تکمیل ضروری ہے، اس کے علاوہ سیوریج کا پانی کا بھی مسئلہ ہے۔انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کا بھی شہر میں مینڈیٹ ہے اور ان کے نمائندوں کے بھی یہی مطالبے ہوں گے، یہ اس شہر کراچی کا حق ہے، ہم سب کوشش کریں گے اس شہر کو اس کا حق دلوایا جائے ۔ؒ واضح رہے کہ اس سے پہلے مسلم لیگ (ن) کے رہنما سابق گورنر سندھ محمدزبیرنے فیصل سبزواری سے رابطہ کیاتھا اور ایم کیوایم کواے پی سی میں شرکت کی دعوت دی تھی جس کے بعد فیصل سبزواری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہاتھا کہ متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ ایم کیو ایم پاکستان مسلم لیگ ن کی آل پارٹیز کانفرنس میں شرکت نہیں کرے گی۔یاد رہے کہ انتخابات میں مبینہ دھاندلی کے خلاف اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے آل پارٹیز کانفرنس کا اعلان کیا تھا جس کے تین اجلاس ہو چکے ہیں اور آئندہ اجلاس کل اسلام آبادمیں ہوگا۔

Share

اپنا تبصرہ بھیجیں